| | | |  


بِسْمِ اللهِ الرَّ حْمٰنِ الرَّ حِیْم

کتاب الآداب

عیادت(۴۱۲)ابوسعیدسے روایت ہے فرمایا رسو ل اللهﷺنے جو تم کسی مریض کی مزاج پرسی کو جاؤ تو اس کو تسکین دو اور اس کے رنج و غم کو بہلاؤ، یہ تسکین و تشفی اگرچہ حکم الٰہی کو نہیں روکتی لیکن مریض کے دل کو تقویت ضرور بخشتی ہے (ترمذی۔ ابن ماجہ)
صبروشکر(۴۱۳)محمد بن خالدروایت کرتے ہیں کہ رسول اللهﷺنے فرمایا جب الله تعالیٰ اپنے کسی نیک بندے کے لئے کوئی ایسا مرتبہ مقرر فرماتا ہے جس کو وہ اپنے عمل صالحہ سے حاصل نہیں کرسکتا تو الله تعالیٰ اس کو مصیبت میں مبتلا کردیتا ہے یا تو وہ بیمار ہوجاتا ہے یا اس کا مال تلف ہوتا ہے یا اس کی اولاد کو نقصان پہنچتا ہے، پھر الله تعالیٰ اس کو صبر کی توفیق عطا فرماتا ہے پس وہ صبر و شکر کرتا ہے یہاں تک کہ اس مرتبہ کو پہنچا دیا جاتا ہے جو اس کے لئے مقرر کیا گیا ہے۔ (ابوداؤد)
حق تلفی(۴۱۴)ابی ہریرہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے کسی شخص نے اپنے مسلمان بھائی کی حق تلفی یا آبروریزی کی ہو تو چاہیے کہ اس سے معافی مانگے اگر اس نے معاف کردیا تو بہتر ہے ورنہ پھر قیامت کے دن حق تلفی کرنے والے کے اعمال میں سے اگر کچھ نیکیاں ہوں گی تو جس کی حق تلفی کی گئی اس کو دیدی جائیں اور نیکیاں اگرنہ ہوں گی تو پھر اس کی برائیاں جس کی حق تلفی کی گئی حق تلفی کرنے والے کو دی جائیں (بخاری)
ممانعت(۴۱۵)ابن عباسسے روایت ہے کہ رسول اللهﷺنے جانوروں کو لڑانے سے منع فرمایا ہے (ترمذی۔ ابوداؤد)
   (۴۱۶)عبدالله بن عمروسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جو شخص ناحق کسی جانور کو مارے گا اس سے قیامت کے دن باز پرس ہوگی۔ (نسائی۔ دارمی)
   (۴۱۷)عبدالرحمٰن بن ابی لیلیٰسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے گھر میں سانپ نکلے تو اس سے کہہ دو کہ ہم تجھ سے حضرت نوح اور حضرت سلیمان بن داؤد کے عہد کے ذریعےیہ چاہتے ہیں کہ تو ہم کو اذیت نہ پہنچا اگر اس کے بعد وہ پھر نظر آئے تو اس کو مارڈالو۔ (ترمذی۔ ابوداؤد)
حلال و حرام(۴۱۸)ابن عباسسے مروی ہے کہ ایام جاہلیت میں لوگ بعض چیزوں کو اپنی خواہش سے کھاتے تھے اور بعض کو نہ کھاتے پھر الله تعالیٰ نے اپنے نبیﷺکو بھیجا اور کتاب نازل فرمایا کر حلال چیزوں کو حلال اور حرام کو حرا م قرار دیا ، پس جو چیز الله تعالیٰ نے حلال کی وہ حلال ہے اور جس چیز سے سکوت اختیار کیا وہ معاف ہے اس پر مواخذہ نہیں۔ (ابوداؤد)
ممانعت(۴۱۹)عبدالرحمٰن بن شبلسے روایت ہے،رسول اللهﷺنے گوہ کا گوشت کھانے سے منع فرمایا ہے۔ (ابوداؤد)
   (۴۲۰)خالد بن ولیدسے روایت ہے رسو ل اللهﷺنے گھوڑوں خچر اور گدھے کاگوشت کھانے سے منع فرمایا ہے۔ (ابوداؤد)
   (۴۲۱)ابن عباسسے روایت ہے رسول اللهﷺنے کونچلی والے درندے اور پنجہ شکار کرنے والے پرندے ناجائز فرمائے ہیں۔ (مسلم)
حرام(۴۲۲)ابوہریرہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے ہر وہ درندہ جو دانتوں سے شکار کرے حرام ہے۔ (مسلم)
ادب(۴۲۳)ابن عمرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے کہ داہنے ہاتھ سے کھایا پیاکرو، بائیں ہاتھ سے کھانا پینا مکروہ ہے۔ (مسلم)
ہدایت(۴۲۴)سہل بن سعدسے روایت ہے رسول اللهﷺنے میدہ سے تیار کیا ہوا کھانا اور چھلنی میں چھنا ہوا آٹا آخر عمر تک استعمال نہیں فرمایا۔ (بخاری)
   (۴۲۵)جابرسے روایت ہے رسول اللهﷺنے فرمایا جس زندہ مچھلی کو دریا باہر پھینکے یا دریا کا پانی کسی دوسری سمت رخ کرے اور اوپر مچھلی زندہ رہ جائیں تو کھانا ان کا جائز ہے اور جو مچھلی پانی کے اندر مرجائے اور اوپر آجائے تو اس کو نہ کھاؤ۔ (ابوداؤد۔ ابن ماجہ)
ادب(۴۲۶)عمر بن ابی سلمہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے کہ کھانا بسم الله کہہ کر سیدھے ہاتھ سے اور اپنے سامنے سے کھایا کرو۔ (بخاری۔ مسلم)
   (۴۲۷)ابوہریرہسے روایت ہے رسول اللهﷺنے فرمایا کہ کھانے پینے کے بعد الله کا شکر ادا کرنا اور الحمد الله کہنا چاہیے۔ (ترمذی۔ ابوداؤد۔ ابن ماجہ۔ دارمی)
   (۴۲۸)ابن عباسسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جو شخص کھانا کھائے وہ اپنے آگے کے کنارے سے کھائے درمیان سے یا دوسرے کنارے سے کھانا بے برکتی کا باعث ہوتا ہے۔ (ابوداؤد، ترمذی، ابن ماجہ)
ہدایت(۴۲۹)حضرت عائشہ صدیقہسے روایت ہے کہ رسول اللهﷺکے گھر کے لوگوں نے کبھی دو دن تک برابر گیہوں کی روٹی نہیں کھائی ان دو دنوں میں سے ایک دن کی غذا کھجور ہوتی تھی۔ (بخاری و مسلم)
   (۴۳۰)ابن عمرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جب کہ دسترخوان بچھادیا جائے کوئی شخص اس وقت تک نہ اٹھے جب تک دستر خوان بڑھا نہ دیا جائے اور سب لوگ فارغ نہ ہوجائیں ،اگر کسی وجہ سے کھانے میں ساتھ نہ سکے سکے تو معذرت کر کے اٹھ جائے۔ (ابن ماجہ۔ بیہقی)
   (۴۳۱)اسماء بنت یزیدسے روایت ہے کہ رسول اللهﷺکے سامنے کھانا لایا گیا پھر ہمارے سامنے کھانے کو پیش کیا گیا ہم نے تکلفاً عرض کیا کہ ہم کو خواہش نہیں ہے حالانکہ ہم بھوکے تھے رسول اللهﷺنے فرمایا بھوک کے ساتھ جھوٹ کو جمع نہ کرو۔ (ابن ماجہ)
ممانعت(۴۳۲)انس۔ ابوہریرہ۔ ابن عباسسے روایت ہے رسو ل اللهﷺنے کھڑے ہوکر پانی پینے اور پانی کے برتن میں پانی پیتے وقت سانس لینے اور پانی میں پھونک مارنے سے منع فرمایا ہے۔ (مسلم۔ ابوداؤد۔ ابن ماجہ)
ہدایت(۴۳۳)جابرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جب رات شروع ہوجائے اور کتے بھونکنے اور گدھپے چلانے لگیں تو الله تعالیٰ سے پناہ مانگو شیاطین کی شیطنت سے اور اپنے بچوں کو گھروں سے باہر نہ نکلنے دو اور خود بھی بے ضرورت گھر سے باہر نہ نکلو اس لئے کہ سورج غروب ہوتے ہی بلیات اور شیاطین آبادیوں میں پھیل جاتے ہیں۔ بسم الله پڑھ کر مکانوں کے دروازے سر شام سے ہی بند کردو اور پانی کے سب برتن ڈھانک دو۔ (مسلم۔ ابوداؤد)
   (۴۳۴)جابرسے روایت ہے رسول اللهﷺنے ایک شخص کو میلے کچیلے کپڑے پہنے پراگندہ بال دیکھ کر کپڑے دھونے بال درست کرنے اور صاف ستھرا رہنے کی ہدایت فرمائی۔ (نسائی)
   (۴۳۵)حضرت عائشہ صدیقہسے روایت ہے کہ اسماء بنت ابی بکررسول اللهﷺکی خدمت میں حاضر ہوئیں اس وقت وہ باریک کپڑا اوڑھے ہوئے تھیں۔ رسول اللهﷺنے نظر پھیرلی اور فرمایا عورتوں کو ایسا کپڑا نہ پہننا چاہیے جس میں سے بدن کی ساخت نظر آئے۔ (ابوداؤد)
   (۴۳۶)ابن عمرسے روایت ہے رسول اللهﷺگھر میں کافور اور اگرکانجورجلوادیا کرتے تھے اور خوشبو کے لئے مذکورہ بخور کی دھونی لیا کرتے تھے۔(مسلم)
داڑھی(۴۳۷)ابن عمرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے لبوں کے بال ترشو اورداڑھی بڑھاؤ۔ (بخاری و مسلم)
   (۴۳۸)ابن عباسسے روایت ہےکہ رسول اللهﷺنے مخنث مردوں پر لعنت فرمائی ہے یعنی ان مردوں پر جو زنانہ شکل و صورت اختیار کریں اور ان عورتوں پر بھی لعنت فرمائی ہے جو وضع قطع میں مردوں کی مشابہت اختیار کریں۔ (بخاری)
ممانعت(۴۳۹)ابوموسیٰ اشعریسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جو شخص نرد کھیلا اس نے الله اور اس کے رسول کی نافرمانی کی۔ (ابوداؤد)
   (۴۴۰)بریدہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جو شخص نرد کے ساتھ کھیلا گویا اس نے اپنے ہاتھوں کو سور کے خون میں رنگا۔ (مسلم)
   (شطرنج، گنجفہ، چوسر، تاش اور اسی قسم کے سب کھیل نرد کی ذیل میں ہیں)
   (۴۴۱)عیسیٰ بن حمزہسے مروی ہے کہ میں عبداللهبن حکیمکے پاس گیا وہ بیمار تھے، میں نے کہا تم تعویذ کیوں نہیں باندھتے؟ انہوں نے کہا ہم اس سے پناہ چاہتے ہیں اس لئے کہ رسول اللهﷺنے فرمایا ہے جو شخص کوئی چیز باندھے یا لٹکائے وہ اسی کے حوالہ کردیا جاتا ہے۔ (ابوداؤد)
   (۴۴۲)عبدالله بن مسعودکی بیوی زینبسے مروی ہے کہ ان کے شوہر نے ان گردن میں تاگا پڑا دیکھ کر پوچھا یہ کیاہے؟ انہوں نے کہا گنڈا ہے جس پر میرے لئے منتر پڑھاگیا ہے۔ عبداللهنے کہا میں نے رسول اللهﷺسے سنا ہے کہ منتر اور ٹوٹکے شرک ہیں۔ (ابوداؤد)
ہدایت(۴۴۳)ابودرداءسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنےالله تعالیٰ نے بیماری بھی پیدا کی ہے اور دوا بھی ہر بیماری کی دوا مقرر ہے تم دوا سے بیماری کا علاج کرو لیکن حرام چیز سے علاج نہ کرو۔ (ابوداؤد)
   (۴۴۴)ابوہریرہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے کلونجی میں ہر بیماری کے لئے شفا ہے مگر موت کی نہیں۔ (بخاری و مسلم)
   (۴۴۵)جابرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے ہر بیماری کی دوا ہے جب دوا بیماری کے موافق ہوجاتی ہے الله تعالیٰ کے حکم سے بیمار اچھا ہوجاتا ہے۔ (مسلم)
   (۴۴۶)رافع بن خدیجسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے بخار دوزخ کی بھاپ ہے تم اس کو پانی سے ٹھنڈا کرو۔ (بخاری۔ مسلم)
   (۴۴۷)ابوہریرہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جو شخص ہر مہینہ میں تین دن صبح کے وقت شہد کو چاٹ لے وہ پھر کسی بڑی بیماری میں مبتلا نہیں ہوتا۔ (ابن ماجہ)
   (۴۴۸)عبدالله بن مسعودسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے دو شفا دینے والی چیزوں کو اپنے اوپر لازم کرلو۔ ایک شہد دوسرے قرآن(ابن ماجہ)
   (۴۴۹)انسسے روایت ہے رسول اللهﷺکی خدمت میں ایک شخص نے عرض کیا ہم گھر میں رہتے تھے ہمارے آدمیوں کی تعداد بھی زیادہ تھی اور مال بھی ہمارے پاس بہت تھا پھر ہم نے وہ گھر چھوڑ دیا اور دوسرے گھر میں چلے گئے اس گھر میں ہمارے آدمیوں کی تعداد بھی کم ہوگئی اور مال بھی کم ہوگیا فرمایا اس گھر کو چھوڑدو۔ (ابوداؤد)
کاہن(۴۵۰)حضرت عائشہ صدیقہسے روایت ہے چند لوگوں نے رسول اللهﷺسے کاہنوں کی بابت پوچھا کہ ان کی بتائی ہوئی باتیں اعتبار کے قابل ہیں یا نہیں؟ فرمایا نہیں۔ لوگوں نے عرض کیا یارسول اللهﷺبعض وقت وہ ایسی باتیں بتاتے ہیں یا ایسی خبردیتے ہیں جو سچ ہوتی ہیں۔ فرمایا فرشتوں کی ایک جماعت ابر میں اترتی ہے اور ان کاموں کا باہم تذکرہ کرتے ہیں جن کا وقوع ہونے والا ہے، شیاطین ان باتوں کو سننے کے لئے کان لگائے رکھتے ہیں جب وہ کوئی بات سن لیتے ہیں تو کاہنوں کے کان میں جاڈالتے ہیں اور کاہن ان باتوں میں کچھ جھوٹ ملا کر اپنی طرف سے بیان کردیتے ہیں۔ (بخاری و مسلم)
نجومی(۴۵۱)حضرت حفصہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جو شخص کسی کاہن یا نجومی کے پاس جائے اور اس سے کچھ دریافت کرے اس کی چالیس دن رات کی نمازیں قبول نہیں کی جاتیں۔ (مسلم)
   (۴۵۲)ابوہریرہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جس شخص نے خواب میں مجھ کو دیکھا اس نے مجھ ہی کو دیکھا اس لئے کہ شیطان میری صورت اختیار نہیں کرسکتا۔ (بخاری و مسلم)
   (۴۵۳)ابی قتادہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے اچھا خواب الله تعالیٰ کی طرف سے ہوتا ہے اور براخواب شیطان کی جانب سے، پس جو شخص اچھا خواب دیکھے وہ اس کو صرف اس شخص سے بیان کرے جس سے اس کو محبت ہو اور جو شخص برا خواب دیکھے تو الله تعالیٰ سے پناہ مانگے اور کسی سے اپنا برا خواب بیان نہ کرے۔ (بخاری۔ مسلم)
ممانعت(۴۵۴)سمرہ بن جندبسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے تم آپس میں ایک دوسرے پر اس طرح لعنت نہ کروکہ تجھ پر الله کی لعنت ہو اور نہ غضب الٰہی نازل ہو نے کی بددعا یا دوزخ میں داخل ہونے کی بددعا کرو۔ (ترمذی)
ہدایت(۴۵۵)انسسے روایت ہے ایک شخص نے عرض کیا یارسول اللهﷺقیامت کب ہوگی؟ فرمایا افسوس ہے تجھ پر قیامت کے لئے تو نےکیا تیاری کی؟ اس نے عرض کیا میں نے کوئی تیاری نہیں کی البتہ میں الله اور الله کے رسولﷺسے محبت رکھتا ہوں فرمایا تو اسی کے ساتھ ہے جس سے محبت رکھتا ہے۔
انسکہتے ہیں میں مسلمانوں کو کسی بات سے اتنا خوش ہوتے نہیں دیکھا جتنا رسول اللهﷺکے اس ارشاد مبارک سے لوگ خوش ہوئے تھے۔ (بخاری و مسلم)
   (۴۵۶)حضرت ابوبکرصدیقسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جنت میں مکار اور بخیل داخل نہ ہوگا اور نہ وہ شخص جو خیرات دے احسان جتائے۔ (ترمذی)
نحوست(۴۵۷)ابن عمرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے نحوست تین چیزوں میں ہوتی ہے، عورت میں، گھر میں، جانور میں۔ (بخاری۔ مسلم)
ہدایت(۴۵۸)ابوہریرہسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے کسی کے برتن میں کتا منہ ڈالے تو برتن کو سات مرتبہ دھو ڈالے، پہلے مرتبہ مٹی سے دھوئے۔ (بخاری و مسلم)
   (۴۵۹)جابر، ابن عمر۔ ابوسعید خدریسے روایت کیا کہ رسول اللهﷺسے ان چشموں اور تالابوں کی نسبت پوچھا گیا جن پر درندے اور چوپائے پانی پیتے ہوں۔ فرمایا جو چیز جانوروں نے اپنے پیٹ میں بھر لی وہ ان کی ہے اور ہمارے لئے وہ چیز ہے جو انہوں نے چھوڑ دی۔ (ابوداؤد ترمذی۔ نسائی۔ دارمی۔ ابن ماجہ)
   (۴۶۰)ابوہریرہسے روایت ہے ایک دیہاتی نے مسجد میں پیشاب یا، لوگوں نے اس کو پکڑ لیا، رسول اللهﷺنے فرمایا اس کو چھوڑ دو، ایک ڈول پانی پیشاب پر بہادو، تم لوگ آسانی کرنے والے بناکر بھیجے گئے ہو مشکل کرنے والے بناکرنہیں بھیجےگئے(بخاری)
   (۴۶۱)ابن عباسسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے حلال جانور کا چمڑا دباغت سے پاک ہوجاتا ہے اگرچہ مردار ہوگیا ہو۔ مردار کا گوشت حرام ہے اور چمڑا چھالوں وغیرہ میں رنگنے اور خشک ہونے سے قابل استعمال ہے۔ (بخاری و مسلم)
   (حرام جانور کا چمڑا ناپاک ہے دباغت سے پاک نہیں ہوتا)
ممانعت(۴۶۲)ابی الملیح بن اسامہاور مقدام بن معدی کربسے روایت ہے رسول اللهﷺنے درندوں اور حرام جانوروں کے چمڑے کو استعمال کرنے سے منع فرمایا ہے۔ (ابوداؤد۔ نسائی۔ ترمذی۔ دارمی)
   (۴۶۳)جریر بن عبداللهسے روایت ہے میں نے رسول اللهﷺسے اجنبی عورت پر ناگہاں نظر پڑجانے کی بابت پوچھا، فرمایا فوراً نظر پھیر لو، ارادتاً مکرّر نہ دیکھو۔ (مسلم)
ہدایت(۴۶۴)ابن مسعودسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے عورت پردہ میں رہنے کی چیز ہے جب وہ باہر نکلتی ہے تو شیطان اس کو مرد کی نگاہ میں بہت خوبصورت دکھاتا ہے۔ (ترمذی)
   (۴۶۵)حضرت عمرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے جب کوئی مرد کسی عورت کے ساتھ تنہائی میں یک جاہوں تو تیسری ہستی شیطان کی ہوتی ہے۔ (ترمذی)
   (۴۶۶)ابوسعیدسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے دوبرہنہ مرد جمع نہ ہوں اور نہ دو برہنہ عورتیں اکھٹی ہوں۔ (مسلم)
   (۴۶۷)ابن عمرسے روایت ہے فرمایا رسول اللهﷺنے اپنے آپ کو برہنہ ہونے سے بچاؤ اگرچہ تنہائی میں ہو اس لئے کہ دوفرشتے تمہارے ساتھ ہیں جو صرف رفع حاجت کے وقت اور جب تم اپنی اہل خانہ کے ساتھ ہم بستر ہو تو تم سے علیحدہ ہوتے ہیں۔ پس ان سے حیا کرو اور ان کی عزت کرو۔ (ترمذی)